ہندوستان کے سامنے سیریز میں برقرار رہنے کا چیلنج

0

جنوبی افریقہ کے خلاف آج ہر حال میں جیت ضروری، بلے بازوں کا امتحان، پنت کی خراب کارکردگی باعث تشویش
راجکوٹ(ایجنسیاں) : آخری میچ میں زبردست فتح درج کرنے کے بعد اعتماد سے بھری رشبھ پنت کی زیر قیادت ہندوستانی کرکٹ ٹیم جمعہ کو پانچ میچوں کی سیریز کے چوتھے ٹی ٹوئنٹی میچ میں جنوبی افریقہ سے مقابلہ کرے گی۔ اس میچ کو جیت کر میزبان ٹیم انڈیا سیریز کو زندہ رکھنے کی کوشش کرے گی۔ دوسری جانب دورہ کرنے والی پروٹیز ٹیم سیریز جیتنے کے ارادے سے راجکوٹ جائے گی۔ ہندوستانی ٹیم 5 میچوں کی سیریز میں 1-2 سے پیچھے ہے۔
کپتان پنت کی خراب فارم ہندوستانی ٹیم کے لیے تشویش کا باعث ہے۔ وشاکھاپٹنم میں کھیلے گئے تیسرے ٹی ٹوئنٹی میچ میں اوپنرز رتوراج گائیکواڑ اور ایشان کشن کے دھماکہ خیز آغاز کے باوجود ہندوستان کا مڈل آرڈر ڈگمگا گیا۔ ایسے میں ہندوستانی ٹیم کے مڈل آرڈر کو چوتھے ٹی 20 میچ میں اچھی کارکردگی دکھانا ہوگی۔ اسپنرز یوزویندر چہل اور اکسر پٹیل نے شاندار بولنگ کی۔ تجربہ کار تیز گیند باز بھونیشور کمار بھی تال میں واپس آگئے ہیں۔رتوراج گائیکواڑ کی فارم میں واپسی ٹیم انڈیا کے لیے اچھی علامت ہے۔ اس بلے باز نے پہلے دو میچوں میں مزید 23 رنز بنائے لیکن تیسرے میچ میں جب ان کی ٹیم کو سب سے زیادہ ضرورت تھی، اس نے نہ صرف 57 رنز بنائے بلکہ اپنی پہلی ٹی ٹوئنٹی نصف سنچری بھی بنائی۔ اس کے علاوہ رتوراج نے ایشان کشن کے ساتھ 97 رنز کی اہم شراکت داری بھی کی۔ راجکوٹ میں ہندوستانی ٹیم کی کارکردگی بھی کافی حد تک اس جوڑی پر منحصر ہوگی۔
کپتان بننے کے بعد پنت کو پہلی جیت ضرور ملی، لیکن ان کی بلے بازی پریشانی کا باعث بن گئی ہے۔ دہلی میں انہوں نے 29 رنز ضرور بنائے، لیکن اس کے بعد وہ صرف پانچ اور چھ رنز بنا پائے ہیں۔ پنت فی الحال چوتھے نمبر پر بلے بازی کر رہے ہیں۔ کٹک میں ان کی ناکامی ہندوستان کی شکست کا ایک بڑا سبب تھی۔
ہندوستان کو راجکوٹ کے سوراشٹرا کرکٹ ایسوسی ایشن اسٹیڈیم میں جنوبی افریقہ کے خلاف پانچ میچوں کی ٹی ٹوئنٹی سیریز کا چوتھا میچ کھیلنا ہے۔ ٹی 20 میچوں میں اس گراؤنڈ پر اب تک ہندوستان کی برتری رہی ہے۔ ٹیم انڈیا نے یہاں اب تک تین ٹی 20 میچ کھیلے ہیں جن میں اس نے دو میں کامیابی حاصل کی ہے۔
تینوں بار ہندوستان نے یہاں نمبر دو پر بلے بازی کی ہے۔ ہندوستانی ٹیم اس سیریز میں جنوبی افریقہ کے خلاف 1-2 سے پیچھے ہے۔ ایسے میں راجکوٹ میں ایک بہتر ریکارڈ رشبھ پنت کی ٹیم کے حوصلے بلند کرنے کا کام کرے گا۔ہندوستان اور جنوبی افریقہ اس گراؤنڈ پر پہلی بار ٹی ٹوئنٹی میں ٹکرائیں گے۔
ہندوستان نے وشاکھاپٹنم میں فتح کے بعد جنوبی افریقہ کے خلاف اپنی سرزمین پر سات میچوں میں دوسری جیت حاصل کی۔ انہیں پانچ میچوں میں شکست ہوئی ہے۔ تاہم 18 میچوں میں 10 جیت کے ساتھ بھارت سرفہرست ہے جبکہ جنوبی افریقہ نے آٹھ میچ جیتے ہیں۔
اس سیریز میں بھونیشور کمار نے شاندار بولنگ کرتے ہوئے چھ وکٹیں حاصل کی ہیں۔ کٹک میں کھیلے گئے دوسرے میچ میں انہوں نے 13 رنز دے کر چار وکٹیں حاصل کیں۔ راجکوٹ گراؤنڈ پر بھی ان کی کارکردگی اچھی رہی ہے۔ انہوں نے یہاں دو میچ کھیلے ہیں جن میں انہوں نے تین وکٹیں حاصل کی ہیں۔ انہوں نے 2013 میں آسٹریلیا کے خلاف 35 رنز دے کر تین وکٹیں حاصل کی تھیں۔ ہندوستان نے یہ میچ جیت لیا۔
یوزویندر چاہل نے بھی وشاکھاپٹنم میں 20 رنز کے عوض تین وکٹیں لے کر اپنی رفتار دوبارہ حاصل کر لی ہے۔ راجکوٹ میں بھی چاہل کی کارکردگی اچھی رہی ہے۔ انہوں نے بھی یہاں دو میچوں میں تین وکٹیں حاصل کی ہیں۔ بنگلہ دیش کے خلاف 2019 میں انہوں نے 28 رنز دے کر دو وکٹیں حاصل کیں۔ بھارت نے یہ میچ بھی جیت لیا۔
شریاس ایر نے بھی یہاں دو میچ کھیلے ہیں۔ 2017 میں انہوں نے نیوزی لینڈ کے خلاف 23 اور بنگلہ دیش کے خلاف 24 ناٹ آؤٹ رنز بنائے۔ بھارت کو نیوزی لینڈ کے خلاف 40 رنز سے شکست ہوئی تھی۔ کولن منرو نے یہاں 109 رنز بنائے۔ کپتان رشبھ پنت یہاں بنگلہ دیش کے خلاف کھیلے لیکن انہیں بلے بازی کا موقع نہیں ملا۔ انہوں نے ایک کیچ لیا اور ایک رن آؤٹ کیا۔