تلنگانہ :گودام میں بھیانک آتشزدگی، 11مزدور زندہ جلے

0

وزیراعلیٰ چندرشیکھر راؤ نے مہلوکین کے ورثہ کیلئے 5-5لاکھ اور وزیراعظم نریندر مودی و بہار کے وزیراعلیٰ نتیش کمار نے 2-2لاکھ روپے معاوضہ کا اعلان کیا
حیدرآباد (یو این آئی) : تلنگانہ کے سکندرآباد علاقہ میں ایک اسکراپ کے گودام میں خطرناک آگ لگنے کے واقعہ میں 11افراد زندہ جل کر ہلاک ہوگئے ۔ سکندرآباد کے بھوئی گوڑہ میں واقع گودام میں شارٹ سرکٹ کی وجہ سے بدھ کی صبح 3 بجے کے قریب اچانک آگ بھڑک اٹھی، جس میں 11افراد زندہ جل کر ہلاک ہوگئے ۔بتایا گیا ہے گودام میں 12افراد سو رہے تھے۔ ان میں سے ایک شخص زندہ بچ نکلنے میں کامیاب ہوا، جبکہ 11 زندہ جل گئے۔پولیس اور فائر بریگیڈ کو آگ بجھانے میں کئی گھنٹوں کا وقت لگا، 5فائر بریگیڈس کی مدد سے آگ پر قابو پایا گیا۔حکام نے بتایا کہ اس واقعہ میں 11افراد موقع پر ہی ہلاک ہو گئے ۔ ان میں سے کچھ آگ میں جل گئے ، جبکہ بعض کی دم گھٹنے سے موت ہوئی۔ حکام نے بتایا کہ تمام مرنے والے بہار سے تعلق رکھتے تھے۔ مرنے والوں کی شناخت بٹو، سکندر، دامودر، ستیندر، چنٹو، دنیش، راجیش، راجو، دیپک اور پنکج کے طور پر ہوئی ہے۔ مزید کی شناخت باقی ہے۔مہلوکین کی عمر20تا25 برس کے درمیان ہے۔یہ تمام مزدور عمارت کی پہلی منزل کے 2 کمروں میں رہتے تھے۔ ریجنل فائر آفیسر وی پاپیا نے بتایا کہ تقریباً 3.55بجے فائرآفس کو اس بات کی اطلاع ملی، جس کے فوری بعد قریبی فائراسٹیشن کے فائربریگیڈس کو ہدایت دی گئی کہ وہ مقام واقعہ پر پہنچ جائیں۔انہوں نے کہاکہ فائربریگیڈ کے اہلکاروں کو مشکل پیش آئی، کیونکہ اس عمارت میں داخل ہونے کا ایک ہی راستہ تھا۔انہوں نے کہاکہ تمام 11افراد کی لاشیں ناقابل شناختحالت میں ہوگئی ہیں۔انہوں نے کہاکہ پہلی منزل پر جانے کیلئے گول سیڑھیاں ہیں۔پہلی منزل پر گودام کے مالک کا دفتر بھی ہے۔نچلی منزل پرکئی کیبل وائر بھی تھے، جبکہ بقیہ حصہ شراب کی خالی بوتلوں، کاغذات اور پلاسٹک کی بوتلوں سے بھرا ہوا تھا۔انہوں نے کہا کہ فائر بریگیڈ س کے اہلکاروں نے شٹر توڑ کر اندر داخل ہونے کی کوشش کی، تاہم شدیدآگ کے شعلوں نے ان کو اندرجانے سے روک دیا۔ کافی جدوجہد کے بعد اندر داخل ہوکر فائربریگیڈ کے اہلکاروں نے آگ پرقابو پایا۔ اسی دوران گورنر ڈاکٹر تمیلی سائی سوندار راجن نے اس واقعہ پر گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے۔ گورنر نے کہاکہ انہوں نے راج بھون کے عہدیداروں سے اس تعلق سے معلومات حاصل کیں۔ گورنر نے مہلوکین کے غمزدہ ارکان خاندان سے تعزیت کا اظہار کیا۔ تلنگانہ کے وزیراعلیٰ کے چندر شیکھر راؤ نے سکندرآباد میں پیش آئے آتشزدگی کے واقعہ میں مزدوروں کی موت پر افسوس کا اظہار کیا۔ انھوں نے آتشزدگی میں مرنے والوں کے خاندانوں کیلئے فی کس 5-5لاکھ روپے ایکس گریشیا کا اعلان کیا۔ ادھر وزیراعظم نریندر مودی نے بھی تلنگانہ کے سکندرآباد بھوئی گوڑہ میں آگ لگنے کے واقعہ میں 11 مزدوروں کے زندہ جھلس کر ہلاک ہوجانے کے واقعہ پر گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ دکھ کی اس گھڑی میں وہ ان کے ساتھ ہیں۔وزیراعظم نے اعلان کیا کہ پی ایم این آرفنڈ سے مہلوکین کے ورثا کو فی کس2-2 لاکھ روپے ایکس گریشیا دیاجائے گا۔ دریں اثنا وزیر اعلیٰ نتیش کمارنے بھی حادثہ کو انتہائی افسوسناک قرار دیتے ہوئے مزدروں کی موت پر اظہار رنج و غم کیا ہے۔ وزیر اعلیٰ نے مہلوکین کے پسماندگان کو وزیر اعلیٰ راحت فنڈ سے 2-2 لاکھ روپے کی رقم دینے کا اعلان کیا ہے ۔وزیر اعلیٰ نے مقامی کمشنر کو ہدایت دی ہے کہ تلنگانہ حکومت سے ضروری رابطہ کر کے مہلوکین کے جسد خاکی کو بہار لانے کے مکمل انتظام کو یقینی بنائیں۔
وزیراعلیٰ نے چیف سکریٹری سومیش کمار کو ہدایت دی کہ وہ اس واقعہ میں ہلاک ہوئے بہار کے مزدوروں کی لاشوں کے ان کے آبائی مقامات پر واپسی کے انتظامات کریں۔ وزیراعلیٰ کی ہدایت کے ساتھ ہی وزیرداخلہ محمد محمودعلی، وزیر افزائش مویشیاں ٹی سرینواس یادو، چیف سکریٹری سومیش کمار کے ساتھ ساتھ کمشنر پولیس حیدرآباد سی وی آنند مقام واقعہ پر پہنچ گئے۔وزیرداخلہ محمد محمود علی نے جائے واقعہ پر پہنچ کر تفصیلات حاصل کیں اور کہاکہ ریاستی حکومت کی طرف سے حیدرآباد میں غیر مجاز گوداموں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ شہر میں تنگ گلیوں اور رہائش گاہوں کے درمیان کئی گودام ہیں۔ وزیر داخلہ نے بتایا کہ اس واقعہ میں 11افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ لاشوں کو گاندھی اسپتال منتقل کیا گیا، جہاں ان کی شناخت ہو رہی ہے ۔یہ لاشیں ایئر ایمبولینس کے ذریعہ گھر بھیجی جائیں گی۔وزیرداخلہ نے گاندھی اسپتال بھی پہنچ کر جلد از جلد لاشوں کے پوسٹ مارٹم کو یقینی بنانے کے اقدامات کئے۔ اس موقع پر سرینواس یادو نے اس واقعہ کے مہلوکین کے غمزدہ ارکان خاندان سے تعزیت کا اظہار کیااور ممکنہ تعاون کی یقین دہانی کروائی۔سومیش کمار نے اس واقعہ کو افسوسناک قراردیا۔کمشنر پولیس حیدرآباد نے کہا کہ ابتدائی جانچ میں پتہ چلا کہ بجلی کے سوئچ بورڈ میں شارٹ سرکٹ اس واقعہ کی اہم وجہ ہے۔انہوں نے اس موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہاکہ اس گودام میں آگ پر قابو پانے کیلئے کوئی مناسب اقدامات نہیں کئے گئے تھے۔انہوں نے کہاکہ مہلوکین کا تعلق بہار کے چھپرا سے ہے۔ مئیر حیدرآباد گدوال وجئے لکشمی نے بھی مقام واقعہ کا تفصیلی معائنہ کیا۔انہوں نے عہدیداروں سے تفصیلات معلوم کیں۔اس موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ اس طرح کے واقعہ کے اعادہ کو روکنے کیلئے مناسب اقدامات کئے جائیں گے ۔انہوں نے کہاکہ اس واقعہ کی مکمل جانچ کروائی جائے گی اور اس کے ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کو یقینی بنایاجائے گا۔