شاہ نے مغربی بنگال کی گورکھا برادری کے نمائندوں کے ساتھ میٹنگ کی

0
Image: NCR News

نئی دہلی ،(یو این آئی) مغربی بنگال کے دارجلنگ ، ترائی اور ڈوارس کے گورکھا برادری کے مطالبے پرمرکزی وزیرداخلہ امت شاہ کی قیادت میں آج یہاں مرکزی حکومت گھورکھا برادری اور ریاستی حکومت کے درمیان آج سہ فریقی مذاکرات کی شروعات ہوئی ۔
پہلے دور کی میٹنگ میں مسٹر شاہ نے گورکھا برادری کے نمائندوں کا موقف سنا اور دوسرے دور میں ریاستی حکومت کے نمائندوں کے ساتھ نومبر میں میٹنگ بلانے کا فیصلہ کیا ۔ وزارت داخلہ کی ایک پریس ریلیز کے مطابق آج کی میٹنگ میں دارجلنگ کے رکن پارلیمنٹ راجو بشٹ کی قیادت میں گورکھا وفد نے گورکھاؤں اور خطے سے متعلق مختلف مسائل پر روشنی ڈالی۔
وزارت نے کہا ’’ مرکزی وزیر داخلہ نے تمام فریقین کی بات سنی اور نومبر میں مغربی بنگال حکومت کی دلائل کو سننے کے لیے نومبر میں مذاکرات کا دوسرا دور منعقد کرنے کا فیصلہ کیا ہے‘‘۔ وزارت کے مطابق اگلے دور کی بات چیت کے لئےمغربی بنگال حکومت سے خاص طور پر سینئر عہدیداروں کو بھیجنے کے لئے کہا گیا ہے ۔

اس میٹنگ میں مرکزی وزیر داخلہ شاہ نے کہا کہ وزیر اعظم نریندرمودی کی قیادت میں مرکزی حکومت گورکھاؤں اور اس کے علاقے سے متعلق مسائل کو حل کرنے کے لیے مسلسل کوششیں کر رہی ہے۔ دارجلنگ ہلز ، ترائی اور ڈوارس خطے کی ہمہ جہت ترقی اور خوشحالی مودی حکومت کی اولین ترجیح رہی ہے۔

آپ کے تاثرات
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here