اپوزیشن کے تبصروں سے وزیراعظم سخت ناراض

0
business-standard.com

نئی دہلی: (یو این آئی) وزیراعظم نریندر مودی نے پارلیمنٹ میں کاغذ پھاڑنے اور بل کے پاس کیے جانے کے سلسلے میں حذب اختلاف کے اراکین کے قابل اعتراض تبصروں پر سخت اظہار ناراضگی ظاہر کی اور کہا کہ اپوزیشن اراکین؛ پارلیمنٹ اور آئین کی بے حرمتی کر رہے ہیں۔

نریندر مودی نے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی پارلیمانی جماعت کی میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے یہ کہا۔ میٹنگ کے بعد پارلیمانی امور کے وزیر پرہلاد جوشی نے کہا ،’کل ترنمول کانگریس کے ایک رکن نے ٹویٹ کیا تھا۔ وزیراعظم نے اسے عوام کی بے حرمتی قرار دیا اور کہا کہ عوام ہی اراکین پارلیمنٹ کو منتخب کرتے ہیں۔ وزیراعظم نے اس بیان پر اظہار ناراضگی کی…پاپڑی-چاٹ بنانے کی بات کرنا قابل اعتراض بیان ہے۔ کاغذ چھین لینا اور ا س کے ٹکڑے کر کے پھینکا اور معافی بھی نہ مانگنا ان کے گھمنڈ کو ظاہر کرتا ہے‘۔

جوشی نے کہا کہ آل انڈیا میڈیکل ایجوکیشن کوٹہ سکیم میں دیگر پسماندہ طبقات (او بی سی) کے لیے 27 فیصد اور معاشی طور پر گذشتہ (ای ڈبلیو ایس) طلبہ کے لیے 10 فیصد ریزرویشن کا انتظام کرنے کے لیے میٹنگ میں وزیراعظم کا شکریہ کیا گیا۔ وزیراعظم نے کہا کہ ہم عوام کے تئیں اپنے عزم کو پورا کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑیں گے۔ وزیراعظم نے ای-روپی کے بارے میں بات کی اور کہا کہ اس کا ہدف عوام کو فائدہ پہنچانا ہے۔

پارلیمانی امور کے مرکزی وزیر مملکت وی مرلی دھرن نے کہا کہ خطاب کے آغاز میں وزیراعظم نے جولائی میں اشیاء اور خدمات ٹیکس (جی ایس ٹی) کلیکشن کے جولائی میں ایک لاکھ 16 ہزار کروڑ روپیے ہونے کی اطلاع دی اور ٹوکیو اولمپک میں پی وی سندھو کو کانسے کا مڈل ملنے اور دونوں ہاکی ٹیموں کی حصولیابیوں پر نیک خواہشات پیش کیں۔

آپ کے تاثرات
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here