ناگلا پاٹےمیں آگ نے 75 خاندانوں کی خوشیاں چھین لیں، 11 سالہ معصوم سمیت نصف درجن جنگلی جانور جل کر راکھ

0

رپورٹر اجمیری وارثی
کاس گنج: کاس گنج ضلع کی پٹیالی تحصیل علاقے میں سکندر پور ویش تھانے کے گاؤں ناگلا پاٹے میں نامعلوم وجوہات کی بنا پر آگ نے 75 خاندانوں کی خوشیاں جل کر راکھ کر دیں۔
آگ لگنے سے دیہاتیوں کے گھر، اناج، نقدی اور دیگر ضروری سامان جل کر خاکستر ہو گیا، جب کہ آگ لگنے سے ایک 11 سالہ بچی جاں بحق اور دو دیگر بچیاں زخمی ہو گئیں۔
جنہیں علاج کے لیے ضلع اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔
یہ 2 بجے کے بعد ہے
پٹیالی کے ایس ڈی ایم پریم نارائن کے مطابق گاؤں میں مغرب کی طرف سے تقریباً دو بجے آگ اس وقت لگی جب گاؤں والے اپنے گھروں میں آرام کر رہے تھے۔
جب تک گاؤں والے نامعلوم وجوہات کی بنا پر آگ بجھانے کے لیے کوئی حکمت عملی سوچ سکتے تھے، تب تک آگ نے شدید شکل اختیار کر لی اور آگ ایک درجن کے قریب رہائشی جھونپڑیوں تک پھیل گئی۔
واقعے کی اطلاع ملتے ہی فائر بریگیڈ نے موقع پر پہنچ کر آگ بجھانے کی کوشش کی تاہم آگ پر قابو نہیں پایا جاسکا، بعد ازاں فائر بریگیڈ سمیت تین فائر ٹینڈرز سمیت دو دیگر اور گاؤں والوں کی مدد سے آگ پر قابو پالیا گیا۔ تقریباً دو گھنٹے بعد کنٹرول میں
آگ لگنے سے گھر میں سوئی ہوئی 11 سالہ انجو کی موت ہو گئی، جب کہ دو دیگر بچیاں جھلس گئی ہیں، جنہیں علاج کے لیے اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔
دیہاتیوں کے مطابق اس ہولناک آگ میں بھینس، گائے اور بیل سمیت نصف درجن سے زائد جانور ہلاک ہو گئے جبکہ متعدد مویشی اور دیہاتی زخمی ہوئے، جن کا علاج جاری ہے۔
واقعہ کی اطلاع ملتے ہی کاس گنج کے ڈی ایم ہرشیتا ماتھر اور ایس پی روہن بوترے بھی موقع پر پہنچ گئے اور ماتحتوں کو راحت اور بچاؤ کام تیز کرنے کی ہدایت دی۔

ڈی ایم کی حیثیت سے اس آگ کے بعد گاؤں میں ڈاکٹروں کی ٹیم کے ساتھ ساتھ انتظامی افسران کو بھی رکنے کی ہدایت دی گئی ہے، راحت اور بچاؤ کا کام مسلسل جاری ہے۔ ملبہ ہٹایا جا رہا ہے، جلد نقصان کا اندازہ لگا کر متاثرین کو مناسب مالی امداد فراہم کی جائے گی۔