دہلی سرکار نے آٹو اور ٹیکسی کے کرایوں پر نظر ثانی کیلئے کمیٹی تشکیل دی

0

نئی دہلی(ایس این بی ) : دہلی سرکار نے بدھ کو راجدھانی میں آٹو رکشا اور ٹیکسیوں کے کرایوں کا جائزہ لینے کے لیے ایک کمیٹی تشکیل دی ہے۔ گزشتہ چند ماہ سے ملک بھر میں ایندھن اور سی این جی کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ ہوا ہے جس کے باعث ان گاڑیوں کے ڈرائیوروں اور مالکان کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ آٹو رکشا اور ٹیکسی ڈرائیوروں کے مفادات کو ذہن میں رکھتے ہوئے دہلی سرکارنے کرایہ پر نظر ثانی کمیٹی تشکیل دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ آٹو، ٹیکسی اور کیب ڈرائیوروں کے ارکان نے پیر کو سی این جی کی قیمتوں میں 2.5 روپے کے تازہ ترین اضافے کے ساتھ ہڑتال کی۔ سرکار کو آٹو اور ٹیکسی یونینوں سے بھی کئی درخواستیں موصول ہوئی تھیں، جن میں کرایہ میں اضافہ اور سی این جی پر سبسڈی جیسے مختلف مطالبات کیے گئے تھے۔ اس معاملے پر وزیر ٹرانسپورٹ کیلاش گہلوت نے بھی منگل کو مختلف آٹو اور ٹیکسی یونینوں کے ساتھ میٹنگ کی۔ موٹر وہیکل ایکٹ 1988 کے سیکشن 67(1) کے تحت مشاورت کے بعد کرایہ پر نظر ثانی کمیٹی کی تشکیل کو مطلع کیا گیا ہے۔ کرایہ پر نظر ثانی کمیٹی کی سربراہی اسپیشل کمشنر (ایس ٹی اے) کریں گے اور اس میں ڈی سی (وہیکل انسپکشن یونٹ؍آٹو رکشہ یونٹ؍ ٹیکسی یونٹ)، ڈپٹی کمشنر اور ڈپٹی کنٹرولر آف اکاؤنٹس کے ساتھ 2 نامزد ڈسٹرکٹ ٹرانسپورٹ آفیسر(ڈی ٹی او) اور ایک تکنیکی ماہرشامل ہوں گے۔ علاوہ ازیں ریذیڈنٹ ویلفیئر ایسوسی ایشنز کے نمائندے، مسافروں اور طلباء کے نمائندے بھی کمیٹی کا حصہ ہیں۔ دہلی سرکار نے پہلے بھی 12.06.2019 کو یکساں کرایہ پر نظرثانی کمیٹی کی تشکیل کے ذریعہ دہلی میں آٹو رکشوں سے وصول کیے جانے والے کرایوں پر نظر ثانی کے لیے نوٹیفکیشن جاری کیا تھا۔ رواں ماہ سی این جی کی قیمتوں میں یہ تیسرا اضافہ ہے۔ اس وقت دہلی میں سی این جی کی قیمت 71.61 روپے فی کلو ہے۔ دہلی میں اس وقت تقریباً 97,000 آٹوز ہیں جن میں نئے رجسٹرڈ ای آٹوز شامل ہیں، جن میں 12,000 کالی پیلی (پیلی-کالی) ٹیکسیاں اور 50,000 اکانومی ریڈیو ٹیکسیاں شامل ہیں اور ان تمام زمروں کو نظرثانی شدہ کرایوں سے فائدہ ہونے کی امید ہے۔ کیلاش گہلوت نے کہا، ’بڑھتی ہوئی ایندھن کی قیمتوں سے متاثر ڈرائیوروں اور مالکان کی حالت دہلی سرکار اچھی طرح سمجھتی ہے۔ میں نے پچھلے 2 دنوں میں متعدد آٹو اور ٹیکسی یونینوں سے بھی ملاقات کی ہے اور ان کو درپیش مختلف مسائل پر تبادلہ خیال کیا ہے۔ کرایہ پر نظر ثانی کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے اور رپورٹ جلد فراہم کرنے کی ہدایات جاری کر دی گئی ہیں۔ میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ ہم ایک ایسا حل نکالیں گے جو ڈرائیوروں /مالکان اور مسافروں کے لیے یکساں دوستانہ ہو۔ اس دوران ، میں ٹیکسی مالکان یا ڈرائیوروں سے جو ابھی تک ہڑتال پر ہیں، کام پر واپس آنے کی درخواست کرتا ہوں تاکہ دہلی کے لوگوں کو تکلیف نہ ہو۔