داؤد ابراہیم گروہ پر شکنجہ کسا، سلیم فروٹ سے پوچھ گچھ

0

ممبئی(یو این آئی) : ای ڈی نے انڈر ورلڈ ڈان داؤد ابراہیم کاسکر پر اپنا شکنجہ کسنا شروع کر دیاہے اور کل داؤد ابراہیم کی بہن حسینہ پارکر کی رہائش گاہ سمیت ممبئی اور اطراف کے علاقوں میں داؤد کے متعلقین کے دس سے زاِئد ٹھکانوں پر چھابہ مارنے اور مافیا ڈان کے کالے دھن کے متعلق معلوماتیں اکٹھا کرنے کے بعد مرکزی ایجنسی نے گینکسٹر چھوٹا شکیل کے قریبی رشتے دار سلیم قریشی عرف سلیم فروٹ ، سے نو گھنٹوں تک پوچھ گچھ کی۔ یہ پوچھ گچھ منی لانڈرنگ کیس کے تمام زاویوں اور اس میں داؤد گینگ کے ارکان کے ملوث ہونے کے بارے میں ای ڈی کی تفشیش کے ایک حصے کے طور پر سامنے آئی ہے۔
ذرائع کے مطابق سلیم فروٹ سے پوچھ تاچھ کے دوران ایجنسی کو کئ ایک اہم ثبوت دستیاب ہوئے تھے اس بنیاد پر ایک بلڑر کو بھی طلب کیا گیا ہے اسی طرح سے ممبئ کے چور بازار علاقے میں واقع پرانے عجائب کی ایک دکان کے مالک کو بھی ای ڈی طلب کریگی اس پر الزام ہیکہ وہ داود گروہ کی جانب سے بلڑروں میں سرمایہ کاری کرتا تھا-
ذرائع نے بتلایا کہ ایجنسی اس بات کی بھی تفشیش کرہی ہے کہ آیا جن کالے دھن کا داود گروہ کی جانب سے استعمال ہوا اسکا استعمال کیا اسے سیاسی تقاریب میں بھی استعمال کیا گیا یا پھر کس سیاستداں کو اس سے فائدہ حاصل ہوا واضح رہے کہ کل گنجان مسلم آبادی والے علاقے ناگپاڑہ کے گارڈن ہال کے اہک فلیٹ پر ای ڈی کے اعلیٰ افسران کی ایک ٹیم نے چھاپہ مارا تھا جس کے دوران ای ڈی کو چند اہم دستاویزات ملے تھے جسے منی لانڈرنگ کے معاملے میں داود اور اسکے ساتھیوں کے خلاف بطور ثبوت استعمال کئے جاسکتے ہیں۔ حال ہی میں ای ڈی نے داؤد ابراہیم اور اسکے ساتھیوں کے خلاف منی لانڈرنگ کا معاملہ درج کیا ہے – جس کی بنیاد پر چھاپے مارے جا رہے ہیں۔ اس ضمن میں اب تک ای ڈی نے کوئی سرکاری بیان جاری نہیں کیا ہے لیکن ای ڈی کے ذرائع نے چھاپے کی تصدیق کی ہے اور کہا ہے کہ مہاراشٹر کی حکمراں جماعت سے تعلق رکھنے والا ایک سنئر سیاستدان بھی داؤد ابراہیم کے ساتھ روابط میں تھا نیز وہ بھی ای ڈی کے راڑر پر ہے ۔