روس کے اسکول میں گولہ باری، یوکرین جنگ کے بیچ فائرنگ سے سنسنی، 6کی موت

0

نئی دہلی (ایجنسی):مدھیہ روس کے ایزوسک میں ایک اسکول میں گولہ باری کی خبر آئی ہے۔ یوکریں جنگ کے بیچ اس خبر سے سنسنی پھیل گئی ہے۔ روس کی سرکاری سماچار ایجنسی ٹاس نے یہ خبر دی۔ گولہ باری کے واقعہ ایزوسک کے اسکول نمبر 88میں ہوئی۔ حملہ وار مہ گولہ باری کیوں کی،یہ ابھی معلوم نہیں چلا ہے۔


ٹاس کے مطابق ایک بندوق بردار نے پیر کو روسی شہر ایزوسک کے ایک اسکول میں گولی چلادی۔ حملہ وار کو پکڑنے یا مار گرانے کی کوشش جاری ہے۔ ٹیلی گراف میسینجر ایپ پر ایک بیان میں گورنر ایلک زینڈر بریچلو نے کہا کہ وہ شہر کے اسکول نمبر88پر پہنچے۔ اسکول میں تحفظ اور راحت کی ٹیمیں پہنچ گئی۔ مرنے والوں میں بچے بھی شامل ہیں۔ گورنر نے بتایا کہ حملہ وار نے خود کو گولی سے اڑا لیا ہے۔ روس کے وزارت داخلہ نے بتایا کہ کم سے کم 6لوگ مارے گئے ہیں اور 20زخمی ہوئے ہیں۔