دہلی فسادات معاملہ:قتل کی کوشش کے الزام سے 6 بری

0

نئی دہلی (ایس این بی) :دہلی فسادات سے متعلق موج پور-بابر پور میٹرو اسٹیشن کے قریب ایک معاملے میں عدالت نے پولیس کی جانچ پر شک ظاہر کیا ہے۔ عدالت نے قتل کی کوشش کے مقدمے میں 6 ملزمان کو شک کا فائدہ دے کر بری کر دیا، لیکن فساد کا الزام برقرار رکھا۔ کڑکڑڈوما کورٹ کے ایڈیشنل سیشن جج امیتابھ راوت نے سیشن کورٹ کے عدم برتاؤ کے پیش نظر فسادات کا معاملہ میٹروپولیٹن مجسٹریٹ کی عدالت میں مزید سماعت کے لیے بھیج دیا۔جج نے کہا کہ جس طریقے سے تفتیش کی گئی اس سے ملزم کے خلاف دفعہ 307 (قتل کی کوشش) کے تحت مقدمہ نہیں بنتا۔ یہ کہا جا سکتا ہے کہ تمام ملزمان نے فسادات میں حصہ لیا تھا۔ان 6 کے علاوہ ایک اور پر بھی مقدمہ پولیس نے درج کیا تھا، لیکن ان پر صرف فسادات کا الزام لگایا گیا تھا۔ پولیس نے اس معاملے میں 25 فروری 2020 کو 7 ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کیا تھا۔ عدالت نے کہا کہ جانچ صرف 6 ملزمان کو فسادیوں کے ہجوم میں شامل ہونے کو دکھانے کے لیے تھی۔ ان میں سے ایک کو گولی لگی، لیکن اسے بھی ملزم بنایا گیا۔ عدالت نے کہا کہ ایک بنیادی وجہ یہ ہو سکتی ہے کہ اسے فسادات کے دوران بندوق کی گولی لگی تھی، اس لیے اسے فسادیوں کے ہجوم کا حصہ سمجھا جا سکتا ہے۔