جنرل اسمبلی میں یوکرینی علاقوں پر روسی قبضہ کےخلاف مذمتی قرارداد منظور

0

143 ممالک نے حمایت اور5نے کی مخالفت ، ہندوستان نے ووٹنگ میں نہیں لیا حصہ
اقوام متحدہ (ایجنسیاں) : اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی (یو این جی اے) نے بدھ کے روز یوکرین کے 4 علاقوں پر روسی قبضے کی مذمت کی قرارداد منظور کی۔ مجموعی طور پر 143 ممالک نے قرارداد کے حق میں جبکہ 5 نے اس کے خلاف ووٹ دیا۔ ہندوستان سمیت 35 سے زائد رکن ممالک اس قرارداد سے دور رہے اور ووٹنگ میں حصہ نہیں لیا۔ یہ قرارداد روس کی جانب سے سلامتی کونسل میں اسی طرح کی ایک قرارداد کو ویٹو کرنے کے چند دن بعد پیش کی گئی، ہندوستان نے اس میں بھی حصہ نہیں لیا تھا۔یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی نے روس کے خلاف مذمتی قرارداد کی منظوری کے بعد ردعمل کا اظہار کیا۔ انہوں نے ٹوئٹ کیا،143 ریاستوں کا مشکور ہوں جنہوں نے اقوام متحدہ جنرل اسمبلی کی تاریخی قرارداد ’یوکرین کی علاقائی سالمیت: اقوام متحدہ کے چارٹر کے اصولوں کا دفاع‘ کی حمایت کی۔ قبل ازیں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں یوکرین کے 4 علاقوں پر قبضے کے خلاف قرارداد کا مسودہ پیش کیا گیا تھا۔ قرارداد میں روس کی مذمت کے لیے کھلے عام ووٹنگ کا مطالبہ کیا گیا تھا لیکن پوتن اس پر خفیہ رائے شماری چاہتے تھے۔ ہندوستان نے اقوام متحدہ میں اس مطالبے کے خلاف ووٹ دیا۔ اس تجویز کو البانیہ نے پیش کیا تھا۔البانوی تجویز کے حق میں 107 ووٹ دئے گئے جب کہ 13 ممالک نے اس کی مخالفت کی۔ دوسری جانب چین، ایران اور روس سمیت 24 ممالک نے قرارداد پر ووٹ نہیں دیا۔ ستمبر کے آخری ہفتے میں روسی صدر ولادیمیر پوتن نے میں یوکرین کے چار علاقوں ڈونیٹسک، لوہانسک، کھیرسن اور زاپوریزہیا کے انضمام کا اعلان کیا اور اس حوالہ سے دستاویزات پر دستخط کر دئے۔