واٹس ایپ نے لاکھوں ہندوستانی کے اکاؤنٹ پر پابندی عائد کردی، جانیں پابندی کی وجہ اور اکاؤنٹ کی تفصیل

0
Image: Money Control

نئی دہلی ( ایجنسی):واٹس ایپ نے 16جون سے 31 جولائی کے درمیان 30 لاکھ سے زائد بھارتی اکاؤنٹس پر پابندی لگا دی۔ رپورٹ کے مطابق تین ملین سے زائد بھارتی اکاؤنٹس پر واٹس ایپ نے پابندی عائد کر دی،جبکہ میسجنگ پلیٹ فارم کو 16 جون سے 31 جولائی کے درمیان 594 شکایتی رپورٹیں موصول ہوئیں۔
جاری ہونے والی اپنی تازہ رپورٹ میں واٹس ایپ نے کہا کہ مذکورہ عرصے کے دوران واٹس ایپ پر ،027،000 بھارتی اکاؤنٹس پر پابندی عائد کی گئی۔اس میں کہا گیا ہے کہ ایک بھارتی اکاؤنٹ کی شناخت 91+فون نمبر کے ذریعے کی جاتی ہے۔

اس سے قبل واٹس ایپ نے کہا تھا کہ 95 فیصد سے زائد پابندیاں خود کار یا بلک میسجنگ کے غیر مجاز استعمال کی وجہ سے ہیں۔ واٹس ایپ کی جانب سے اپنے پلیٹ فارم پر غلط استعمال کو روکنے کے لیے استعمال کیے جانے والے اکاونٹ کی عالمی اوسط تعداد ہر ماہ تقریبا 80 لاکھ اکاؤنٹس ہے۔

واٹس ایپ نے اپنی تازہ ترین رپورٹ میں کہا کہ اسے 16 جون اور 31 جولائی کے درمیان اکاؤنٹ سپورٹ (137)،بین اپیل (316)،دیگر سپورٹ (45)، پروڈکٹ سپورٹ (64) اور سیفٹی (32) میں 594 صارف رپورٹس موصول ہوئی ہیں۔ رپورٹ کے مطابق اس عرصے کے دوران 74 اکاؤنٹس پر کارروائی کی گئی۔

واٹس ایپ نے وضاحت کی کہ “اکاؤنٹس ایکشن” سے مراد ایسی رپورٹس ہیں جہاں اس نے رپورٹ کی بنیاد پر اصلاحی کارروائی کی۔
کارروائی کرنے سے مراد یا تو کسی اکاؤنٹ پر پابندی لگانا یا شکایت کے نتیجے میں پہلے سے پابندی والے اکاؤنٹ کو بحال کرنا ہے۔

اس کے علاوہ رپورٹ کا جائزہ لیا جا سکتا ہے لیکن کئی وجوہات کی بناء پر اسے ‘ایکشن’ کے طور پر شامل نہیں کیا گیا،بشمول صارف کو اپنے اکاؤنٹ تک رسائی حاصل کرنے یا کچھ فیچر استعمال کرنے کے لیے مدد کی ضرورت ہے،صارف نے ایک محدود اکاؤنٹ تک رسائی حاصل کی ہو گی۔ بحالی کی درخواست کی گئی ہے اور درخواست مسترد کر دی گئی ہے،یا اگر رپورٹ شدہ اکاؤنٹ ہندوستان کے قوانین یا واٹس ایپ کی سروس کی شرائط کی خلاف ورزی نہیں کرتا ہے۔

ایک بیان میں فیس بک کی ملکیت والی کمپنی نے کہا کہ اس کی تازہ ترین رپورٹ میں صارفین کی شکایات کی تفصیلات اور واٹس ایپ کی جانب سے کی گئی کارروائی کے ساتھ ساتھ واٹس ایپ کے اپنے پلیٹ فارم پر بدسلوکی سے نمٹنے کے لیے خود کی حفاظتی کارروائی بھی شامل ہے۔
واٹس ایپ کے ایک ترجمان نے کہا کہ کئی سالوں سے پلیٹ فارم نے مصنوعی ذہانت اور دیگر جدید ٹیکنالوجی ڈیٹا سائنسدانوں اور ماہرین اور اس کے صارفین کو پلیٹ فارم پر محفوظ رکھنے کے لیے مسلسل سرمایہ کاری کی ہے۔
ترجمان نے کہا “آئی ٹی رولز 2021 کے مطابق،ہم نے اپنی دوسری ماہانہ رپورٹ 46 دنوں کی مدت کے لیے 16 جون سے 31 جولائی تک شائع کی ہے۔ “آئی ٹی کے نئے قوانین – جو 26 مئی کو نافذ ہوئے تھے،بڑے ڈیجیٹل پلیٹ فارمز (5 ملین سے زائد صارفین کے ساتھ) کو ہر ماہ رپورٹ شائع کرنے کی ضرورت ہوتی ہے، موصول ہونے والی شکایات اور کارروائی کی تفصیل۔اس سے پہلے واٹس ایپ نے اس بات پر زور دیا ہے کہ اینکرپٹڈ پلیٹ فارم کو ختم کرنے کی وجہ سے اس میں کسی بھی پیغام کے مواد کی کوئی نمائش نہیں ہے۔
اکاؤنٹس سے رویے کے اشارے کے علاوہ یہ دستیاب “غیر خفیہ کردہ معلومات” پر انحصار کرتا ہے ، بشمول صارف کی رپورٹس ، پروفائل فوٹو ، گروپ فوٹو اور تفصیل کے ساتھ ساتھ اس کے پلیٹ فارم پر اعلی درجے کے AI ٹولز اور وسائل بشمول غلط استعمال کا پتہ لگانے اور روکنے کے لیے۔

آپ کے تاثرات
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here