پرینکا چترویدی سمیت راجیہ سبھا کے 12پارلیمنٹ رکن معطل، کانگریس کے 6،شیو سینا 2 ٹی ایم سی کے 2

0
digall

نئی دہلی (ایجنسی): راجیہ سبھا نے اپنے سرمائی اجلاس کے پہلے دن ارکان پارلیمنٹ کے خلاف بڑی کارروائی کی ہے۔ ایوان نے پیر کو اپنے 12 ارکان بشمول شیوسینا کی رکن پارلیمنٹ پرینکا چترویدی اور ترنمول کی رکن پارلیمنٹ ڈولا سین کو موجودہ اجلاس کی بقیہ مدت کے لیے معطل کردیا۔ مانسون اجلاس میں نظم و ضبط پھیلانے


پر ان کے خلاف کارروائی کی گئی ہے۔ پرینکا چترویدی اور ڈولا سین کے علاوہ جن ممبران پارلیمنٹ کو پیر کو معطل کیا گیا ان میں ایلارام کریم (سی پی ایم)،


کانگریس کی پھولو دیوی نیتام، چھایا ورما، آر بورا، راجمانی پٹیل، سید ناصر حسین، اکھلیش پرساد سنگھ، سی پی آئی کے بینوئے وشوام، ٹی ایم سی کی شانتا چھیتری اور شیوسینا کے انیل دیسائی شامل ہیں۔ معطلی کے نوٹس میں کہا گیا ہے کہ ارکان پارلیمنٹ نے اپنے پرتشدد رویے اور 11 اگست کو مانسون اجلاس کے آخری دن سکیورٹی اہلکاروں پر جان بوجھ کر حملوں سے ایوان کے وقار کو مجروح کیا ہے۔

شیوسینا ایم پی راجیہ سبھا کے فیصلے سے ناراض
راجیہ سبھا کی طرف سے کی گئی کارروائی پر شیو سینا کی رکن پارلیمنٹ پرینکا چترویدی نے کہا، “اگر آپ سی سی ٹی وی فوٹیج دیکھیں تو یہ ریکارڈ ہوتا ہے کہ کس طرح مرد مارشلز نے خواتین ممبران پارلیمنٹ کو مارا پیٹا۔ یہ سب ایک طرف اور آپ کا فیصلہ دوسری طرف؟ یہ کیسا غیر پارلیمانی رویہ ہے؟ ان کے لیے وکلاء بھی فراہم کیے گئے ہیں۔ بعض اوقات سرکاری افسران کو ان کا ساتھ دینے کے لیے بھیجا جاتا ہے، لیکن یہاں ہمیں نہیں لیا گیا۔

آپ کے تاثرات
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0
+1
2

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here