ہندوستان نے ساتویں بار ویمنس ایشیا کپ ٹرافی اپنے نام کی

0

سلہٹ (یو این آئی) :اسمرتی مندھانا (51ناٹ آؤٹ) کی گیند بازوں کی دھماکہ خیز نصف سنچری کے بعد ہندوستان نے ہفتہ کو ویمنس ایشیا کپ
2022 کے فائنل میں سری لنکا کو آٹھ وکٹوں سے شکست دے دی۔
سری لنکا نے ہندوستان کو 20 اوورز میں 66 رنز کا ہدف دیا جسے ہندوستان نے 8.3 اوورز میں حاصل کر لیا۔یہ ویمنز ایشیا کپ کا آٹھواں
ایونٹ تھا جب کہ یہ ہندوستان کی ساتویں جیت تھی۔ ہندوستان نے ون ڈے فارمیٹ میں چار بار اور ٹی ٹوئنٹی فارمیٹ میں تین بار خواتین کا ایشیا کپ
جیتا ہے ۔
رینوکا سنگھ نے تین وکٹیں لے کر ہندوستان کی فتح کی بنیاد رکھی جبکہ راجیشوری گایکواڈ اور اسنیا رانا نے دو دو وکٹیں لے کر سری لنکا کو 65
رنز تک محدود کردیا۔ ہندوستان کو 66 رنز کے ہدف تک لے جانے کی کوشش میں شیفالی ورما (05) اور جمیمہ روڈریگز (02) آؤٹ ہو گئے ،
لیکن اسمرتی نے کپتان ہرمن پریت کور کے ساتھ تیسرے وکٹ کے لیے 36رنز کی شراکت کے ساتھ ہندوستان کو آسان فتح دلائی۔ اسمرتی نے 25
گیندوں پر چھ چوکوں اور تین چھکوں کی مدد سے ناٹ آؤٹ 51 رن بنائے جبکہ ہرمن پریت نے 14 گیندوں پر ایک چوکے کی مدد سے ناٹ آؤٹ
11 رن بنائے ۔
رینوکا سنگھ کومیچ جبکہ دیپتی شرما کو سیریز کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔
یہاں سلہٹ انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم میں کھیلے گئے میچ میں سری لنکا نے ٹاس جیت کر بیٹنگ کا فیصلہ کیا لیکن فیصلہ ان کے حق میں بالکل نہیں گیا۔
تیسرے اوور میں کپتان اور اوپنر چماری اتاپتو (06) کے رن آؤٹ ہونے کے بعد سری لنکا کی ٹیم کے آؤٹ ہونے کا سلسلہ شروع ہوگیا۔ رینوکا سنگھ
(5/3) نے اگلے ہی اوور میں ہرشیتا مادوی اور ہسینی پریرا کو آؤٹ کیا جبکہ انوشکا سنجیوانی رن آؤٹ ہوگئیں۔ اس کے بعد رینک نے چھٹے اوور
میں کاویشا دلہری کو آؤٹ کر کے سری لنکا کی آدھی ٹیم کو 16 رنز پر پویلین بھیج دیا۔
راجیشوری گائیکواڈ (16/2) نے نیلاکشی ڈی سلوا اور اوشادی رانا سنگھ کی وکٹیں حاصل کیں جبکہ اسنیا رانا (13/2) نے ملشا شہانی اور
سوگندھا کماری کو آؤٹ کیا۔
سری لنکا کی نو وکٹیں 43 رنز پر گرنے کے بعد آخری دو بلے بازوں نے 27 گیندوں پر 22 رنز کی محتاط شراکت داری کرتے ہوئے ٹیم کو
20 اوورز میں 65/9 تک پہنچا دیا۔ انوکا رنویر نے 22 گیندوں پر دو چوکوں کی مدد سے ناٹ آؤٹ 18 رنز بنائے جبکہ نمبر 11 بلے باز
اچینی کلسوریا نے 13 گیندوں میں چھ رنز جوڑے ۔
ہندوستان کے لیے 66 رنز کے ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے اسمرتی نے شروع سے ہی بڑے شاٹس کھیلے ، حالانکہ شیفالی مختصر جدوجہد کے بعد
آٹھ گیندوں پر پانچ رنز بنا کر آؤٹ ہو گئیں۔ وہ رنویر کی گیند پر وکٹ کیپر سنجیوانی کے ہاتھوں اسٹمپ ہوگئی۔ تیسرے نمبر پر بلے بازی کے لیے آنے
والی جمائمہ بھی صرف دو رنز بنا کر پویلین لوٹ گئیں لیکن اسمرتی نے رن ریٹ کو نہیں روکا۔ چوتھے نمبر پر بلے بازی کے لیے آتے ہوئے ہرمن
پریت نے دوسری گیند پر چوکا لگا کر اسمرتی کا ساتھ دیا۔ اسمرتی نے آخر کار نویں اوور کی تیسری گیند پر چھکا لگا کر ہندوستان کو جیت کی راہ
دکھائی اور ایشیا کپ 2018 کے فائنل میں شکست کو پیچھے چھوڑ دیا۔