یوکرین کی بندرگاہ پر روسی حملے میں توانائی کی تنصیبات تباہ، 15 لاکھ افراد بجلی سے محروم

0
Lukyanivka: A tank damaged by fighting between Russian and Ukrainian troops in Lukyanivka, Kyiv region, Ukraine, Monday March 27, 2022. The memorial for the residents of Lukyanivka killed during Great Patriotic War 1941-1945 (WWII) is seen in the background, also damaged. AP/PTI(AP03_28_2022_000108B)

کیف: (ایجنسی) روس کی جانب سے یوکرین کی بندرگاہ اوڈیسہ میں دو توانائی کی تنصیبات کو نشانہ بنائے جانے کے بعد 15 لاکھ افراد بجلی سے محروم ہوگئے ہیں۔ غیرملکی میڈیا کے مطابق روس نے توانائی کی تنصیبات کو نشانہ بنانے کے لیے ایرانی ساختہ ڈرون استعمال کیے ہیں تاہم آزاد ذرائع سے اس دعویٰ کی تصدیق نہیں ہوسکی ہے۔دوسری جانب صدر ولادیمیر زیلنسکی نے اپنے ویڈیو خطاب میں کہا کہ اوڈیسہ کے علاقے میں صورتحال بہت مشکل ہے، بدقسمتی سے، بجلی بحال کرنے میں زیادہ وقت لگ سکتا ہے، بدقسمتی سے اس میں گھنٹے نہیں بلکہ چند دن لگیں گے۔اکتوبر سے ماسکو نے یوکرین کے توانائی کے بنیادی ڈھانچوں کو میزائلوں اور ڈرون حملوں سے نشانہ بنارہا ہے۔ زیلنسکی نے کہا کہ ناروے یوکرین کے توانائی کے نظام کو بحال کرنے میں مدد کے لیے 100 ملین ڈالر بھیج رہا ہے۔