دی کشمیر فائلز فلم کی کمائی کشمیری پنڈتوں کو دی جائے :نیاز خان

0

بھوپال: (یو این آئی) کانگریس کے سابق جنرل سکریٹری دگ وجئے سنگھ نے ہندوستانی انتظامی سروس کے افسر نیاز خان کی طرف سے’دی کشمیر فائلز‘کے ہدایت کار وویک اگنی ہوتری کو دی گئی اس تجویز کی حمایت کرتے ہوئے آج کہا کہ اگر فلم کی کمائی کشمیری پنڈتوں کو دی جاتی ہے تو کسی کو اعتراض نہیں ہونا چاہیے۔
مسٹر سنگھ نے اپنے ٹویٹ میں کہا کہ نیاز خان کی طرف سے یہ ایک اچھی تجویز ہے۔ اگر فلم کی کمائی کشمیری پنڈتوں کے بچوں کی تعلیم اور ان کے مفاد کے لئے دی جاتی ہے تو کسی کو اعتراض نہیں ہونا چاہیے۔ اس کے ساتھ انہوں نے مسٹر خان کی طرف سے کل اگنی ہوتری کودی گئی تجویز سے متعلق ایک خبر کا لنک بھی پوسٹ کیا ہے۔ تاہم، دگ وجے سنگھ ایک بار پھر اپنے اس ٹویٹ کو لے کر ٹرولرز کی تنقید کی زد میں آگئے ہیں۔ دراصل، انتظامی افسر نیاز خان گزشتہ دو دنوں سے اپنے ٹویٹس کے تعلق سے خبروں میں ہیں۔ گزشتہ روز انہوں نے اپنے ٹوئٹ میں کہا تھاکہ ‘دی کشمیر فائلز’ کی کمائی تقریباً 150 کروڑ روپے تک پہنچ گئی ہے۔ فلم کے ڈائریکٹر کو اس فلم سے حاصل ہونے والی رقم کشمیری پنڈتوں کے بچوں کی بحالی میں لگا دینی چاہیے۔ ان کےاس ٹویٹ کا جواب دیتے ہوئے اگنی ہوتری نے کہا کہ تھا کہ نیاز خان انہیں ملاقات کا وقت دے دیں، تاکہ وہ آپس میں بات کریں کہ وہ کشمیری پنڈتوں کی کس طرح مدد کرسکتے ہیں اور نیاز خان اپنی کتابوں کی رائلٹی سے اوربطور انتظامی سروس آفیسرمدد کرسکتے ہیں۔
دو دن پہلے بھی نیاز خان نے ایک ٹویٹ میں کہا تھا کہ فلم بنانے والوں کو ملک بھر میں بڑی تعداد میں ہورہی مسلمانوں کی نسل کشی پر بھی فلم بنانی چاہیے۔ اس کے ساتھ انہوں نے کہا کہ وہ مختلف مواقع پر ہوئی مسلمانوں کی نسل کشی پر کتاب لکھنے کا سوچ رہے ہیں، تاکہ کوئی پروڈیوسر ان کی کتاب پر بھی کشمیر فائلز جیسی فلم بنائے اوراقلیتوں کے درد کو سب کے سامنے لایاجا سکے۔