مفت بجلی حق ہے، ریوڑی نہیں، اب صفائی پر ہوگی خاص توجہ: کجریوال

0
image:businessstandard

نئی دہلی(ایس این بی) :عام آدمی پارٹی کے قومی کنوینر اور دہلی کے وزیر اعلی اروند کجریوال نے آج کرول باغ اسمبلی حلقہ کے پہاڑ گنج میں ایک سڑک میٹنگ کرتے ہوئے کہا کہ عام آدمی پارٹی کی حکومت نے اسکول، اسپتال بنائے ہیں، پانی، بجلی کا بندوبست کیا ہے۔ اب دہلی کی بھی صفائی کروں گا. اس بار سب مل کر “AAP” کو موقع دیں۔ دہلی میں کجریوال کی حکومت ہے، اب کجریوال کو بھی کونسلر بنا دیں۔ میں صفائی کروا¶ں گا، گلی بنوا¶ں گا اور پانی کا انتظام کروں گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ جس طرح دہلی کے لوگوں نے اسمبلی انتخابات میں ہمیں 70 میں سے 67 سیٹیں دیں، اسی طرح ایم سی ڈی میں 250 سیٹیں دی گئیں۔ان میں سے 230 نشستیں درکار ہیں۔ اگر آپ بھولے سے بھی بی جے پی والے کو جتوا دیں تو سارے کام ٹھپ ہو جائیں گے۔ وہ ہم سے لڑیں گے اور ہمیں پریشان کریں گے۔ میں روز ان سے لڑتا ہوں۔ یہ لوگ روز میرا کام روکتے ہیں۔ اس لیے کام روکنے والوں کو ووٹ نہ دیں، کام کرنے والوں کو ووٹ دیں۔
عام آدمی پارٹی کے قومی کنوینر اور دہلی کے وزیر اعلی اروند کجریوال نے آج ایم سی ڈی انتخابات کے سلسلے میں کرول باغ اسمبلی حلقہ کے پہاڑ گنج میں عوام کے ساتھ عوامی بات چیت کی۔ اس دوران “آپ” کے سینئر لیڈر اور دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا، ایم سی ڈی کے انچارج اور ایم ایل اے درگیش پاٹھک اور “آپ” کے ایم ایل اے۔وشیش روی سمیت پارٹی کے سینئر لیڈران موجود تھے۔ اس جلسہ عام میں ماحول خراب کرنے کی نیت سے بی جے پی کے کچھ کارکن آئے اور ہنگامہ کرنے کی کوشش کی۔ اس پر آپ کے قومی کنوینر اروند کجریوال نے کہا کہ جمہوریت بات چیت سے چلتی ہے۔ ہم عوام سے بات کرنے آئے ہیں۔ اگر وہ بات کرنا چاہتے ہیں۔کھڑے ہو کر سکون سے بات کرنی چاہیے تھی۔ جمہوریت غنڈہ گردی سے نہیں چلتی۔ اس طرح دوسروں کی محفل میں آکر بدمعاشی، گالی گلوچ اور گالیاں دینا اچھی بات نہیں۔ میں ہمیشہ کہتا ہوں کہ اگر آپ غنڈہ گردی چاہتے ہیں تو ان کے پاس جائیں۔ میں غنڈہ گردی کرنا نہیں جانتا۔ غنڈہ گردی، گالی گلوچ اور گالی گلوچ غنڈہ گردی اچھی چیز نہیں ہے۔ اگر آپ بات کرنا چاہتے ہیں تو کھڑے ہو جائیں۔ ہم آپ کو مائیک دیں گے، آپ بھی بولیں۔ میں بات کرنے آیا ہوں تقریر کرنے نہیں آیا۔آپ کے قومی کنوینر اروند کجریوال نے کہا کہ MCD انتخابات 4 دسمبر کو ہیں۔ یہ بہت اہم الیکشن ہے۔ آج میں تقریر کرنے نہیں آیا، میں آپ لوگوں سے بات کرنے اور آپ کے خیالات جاننے آیا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی ایم سی ڈی پر 15 سال سے حکومت کر رہی ہے۔ 15 سالوں میں بی جے پی ایم سی ڈی میں ایک بھی اچھا کام نہیں ہوا، جب کہ 7 سالوں میں عام آدمی پارٹی کی حکومت نے دہلی کے اندر سرکاری اسکول بنائے، سرکاری اسپتال بنائے، پانی مفت بنایا، بجلی مفت کی، محلہ کلینک بنائے، سی سی ٹی وی کیمرے لگائے۔ انہوں نے کہا کہ دہلی کا کچرا اٹھا کر دہلی کو صاف کرنے کی ضرورت ہے۔ میں ان سے کہتا ہوں کہ دہلی میں کچرا صاف کرنے کی ذمہ داری دہلی حکومت کی نہیں بلکہ دہلی میونسپل کارپوریشن کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دہلی کا کچرا صرف عام آدمی ہی صاف کر سکتا ہے۔یہ صرف پارٹی ہی کر سکتی ہے۔ اس بار سب مل کر عام آدمی پارٹی کو موقع دیں۔
“آپ” کے قومی کنوینر اروند کجریوال نے کہا کہ یہ لوگ مفت بجلی کو مفت کی ریوڑی کہتے ہیں۔ ایسا کام کریں جیسے وہ ہم پر احسان کر رہے ہوں۔ ہم ایسے کام کرتے ہیں جیسے ہم بھکاری ہوں۔ مفت بجلی آپ کا حق ہے مفت نہیں۔ یہ لوگ فری کی ریواڑی کا نعرہ لگاتے ہیں کیونکہ یہ لوگ دہلی میں مفت بجلی بند کرنا چاہتے ہیں۔ بی جے پی والوں نے سازش کی ہے۔ وہ دہلی میں مفت بجلی بند کرنا چاہتے ہیں، لیکن فکر نہ کریں۔ جب تک کجریوال زندہ ہے ، بجلی مفت رہے گی۔
دہلی میں کجریوال کی حکومت ہے، اب کجریوال کے بھی کونسلر جتا دو، میں تمہارے سارے کام کروا دوں گا۔ میں آپ کا کچرا اٹھا¶ں گا، میں اسے صاف کروں گا، میں گلی بنا¶ں گا، پانی کا انتظام کروں گا، میں نے بجلی پہلے ہی ٹھیک کر دی ہے۔ ایم سی ڈی اسکولوں کو بھی ٹھیک کرنا ہوگا۔ ہم سب دہلی سے بہت پیار کرتے ہیں۔ ہم مل کر دہلی کو چمکائیں گے اور دہلی کو دنیا کا بہترین شہر بنائیں گے۔ ہمیں اپنی دہلی پر فخر ہوگا۔ ہم دہلی کو ایسا بنائیں گے کہ پوری دنیا دہلی کو دیکھنے آئے گی۔ اسی دوران عام آدمی پارٹی کے سینئر لیڈر اور نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے کہا کہ آپ سب جانتے ہیں کہ بلدیاتی انتخابات 4 دسمبر کو ہونے والے ہیں۔ ایم سی ڈی کا سب سے اہم کام دہلی کی صفائی ہے۔ لیکن گزشتہ 15 سالوں سے ایم سی ڈی میں برسراقتدار رہنے والی بی جے پی اسے صاف کرنے میں ناکام رہی ہے۔
لوگوں نے کہا- بی جے پی نے 15 سالوں میں دہلی کو کچرے اور کرپشن کا پہاڑ بنا دیا۔ جب آپ کے قومی کنوینر اروند کجریوال نے عوام سے پوچھا کہ بی جے پی نے ان 15 سالوں میں کوئی اچھا کام کیا ہے؟ اس کے جواب میں عوام نے ایک آواز میں کہا کہ بی جے پی نے ایک بھی اچھا کام نہیں کیا۔ عوام نے کہا کہ 15 سالوں میں بی جے پی نے دہلی کو کچرے کے پہاڑ دیے اور کرپشن کیا ۔ پوری دہلی میں کچرا ڈال دیا گیا ہے۔ عوام نے مزید کہا کہ بی جے پی نے ان 15 سالوں میں ایم سی ڈی کے پرائمری اسکولوں کو بیکار بنا دیا ہے۔
ہمارے بہن بھائی ان اسکولوں میں پڑھتے ہیں۔
یہ ایک چھوٹا اسکول ہے، نہ صفائی کا انتظام ہے، نہ پانی اور نہ بچوں کے لیے کھیل کا میدان ہے۔ لوگوں نے کہا – “آپ” حکومت نے 7 سالوں میں ہر سہولت دے کر سب کا دل جیت لیا۔عام آدمی پارٹی کے قومی کنوینر اور وزیر اعلی اروند کجریوال نے عوام سے پوچھا کہ دہلی میں پچھلے 7 سالوں سے عام آدمی پارٹی کی حکومت ہے۔ کیا ان 7 سالوں میں عام آدمی پارٹی کی حکومت نے کوئی اچھا کام کیا ہے؟اس پر وہاں موجود تمام لوگوں نے ایک آواز میں کہا کہ آپ کی حکومت نے بہت سے اچھے کام کیے ہیں۔ عوام کا کہنا تھا کہ تمام کام بہت اچھے طریقے سے ہوئے ہیں۔ “آپ” حکومت نے سرکاری اسکولوں کے ساتھ اچھا کیا۔ اسکولوں میں تعلیم، صفائی ستھرائی کا بہت اچھا کیا گیا ہے۔ بجلی اچھی کردی، بجلی مفت کی۔ محلہ کلینک بنائے گئے۔ پانی مفت اور اچھا کیا. صحت کی سہولیات کو بہتر بنایا۔ خواتین کے لیے بسوں میں مفت سفر کا انتظام ہے۔ “کجریوال کی حکومت، کجریوال کا کونسلر” اس دوران لوگوں کی بڑی تعداد اپنے محبوب وزیر اعلیٰ اروند کجریوال کو سننے کے لیے جمع ہوئی۔ لوگوں میں جوش و خروشدیکھا گیا۔ لوگ ہاتھوں میں جھاڑو لیے ایم سی ڈی میں کجریوال کے نعرے لگا رہے تھے۔ وزیر اعلیٰ اروند کجریوال نے جیسے ہی بولنا شروع کیا، لوگوں نے جھاڑو اور جھاڑو کے نعرے لگانے شروع کر دیے۔ اسی دوران عام آدمی پارٹی کے سینئر لیڈر اور نائب وزیر اعلیٰ منیش سسودیا نے نعرہ لگایا کہ دہلی میں کجریوال کی حکومت کونسلر کجریوال کی ہے۔ نائب وزیر اعلیٰ منیش سسودیا کے ذریعہ لگائے گئے اس نعرے کو وہاں موجود لوگوں نے جوش و خروش سے دہرایا۔ لوگ اونچی آواز میں یہ نعرہ کئی بار دہراتے ہیں۔ایم سی ڈی میں بھی عام آدمی پارٹی کی حکومت بنانے کی بات کی۔ لوگوں نے عوامی ڈائیلاگ کے دوران وزیر اعلیٰ اروند کجریوال کو بتایا کہ عام آدمی پارٹی کو 240 سیٹیں آرہی ہیں۔