ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ نے علاقے میں ٹیمیں بھیج کر فوری طور پر میٹرنگ کروائی جائے اور زمین سے ناجائز تجاوزات کو ہٹایا جائے

0

رپورٹر اجمیری وارثی
کاس گنج : ضلع مجسٹریٹ ہرشیتا ماتھر کی صدارت میں تحصیل کاس گنج کے آڈیٹوریم میں سمپورن سمدھن دیوس کا انعقاد کیا گیا۔ کاس گنج کی صدر تحصیل میں ضلع مجسٹریٹ نے کہا کہ یوم قرارداد کے دوران موصول ہونے والی تمام شکایات کا بروقت ازالہ کیا جائے اور معیار کو نظر انداز نہ کیا جائے۔ اراضی کے تنازعات کی زیادہ سے زیادہ شکایات موصول ہونے پر ضلع مجسٹریٹ نے ہدایت کی کہ علاقے میں ٹیمیں بھیج کر فوری پیمائش کی جائے اور زمین سے ناجائز تجاوزات کو ہٹایا جائے اور زمینی تنازعات کو حل کیا جائے۔
سمپورن سمدھن دیوس کے دوران، ایسے 10 کسانوں کو، جن کے گوداموں میں آگ لگنے سے کھیتوں کو نقصان پہنچا ہے، انہیں 238000/- روپے (دو لاکھ اڑتیس ہزار روپے) کے چیک بطور معاوضہ دئیے گئے۔
سمپورن سمدھن دیوس کے دوران غیر متنازعہ وراثت کے اندراج کے لیے جاری مہم کے تحت 10 افراد کو بطور وارث رجسٹر کرنے کے بعد ایم ایل اے صدر اور ضلع مجسٹریٹ کے کمل ٹیکس سے خسرہ اور کھٹونی کی تقسیم کی گئی۔
مذکورہ موضوع پر روشنی ڈالتے ہوئے ضلع مجسٹریٹ نے کہا کہ ریونیو ریکارڈ کو تازہ ترین رکھنے، زمینی تنازعات کے موثر حل کے لیے 20 جون 2022 تک تمام دیہاتوں میں غیر متنازعہ ورثاء کے ناموں کا لازمی اندراج کرنے کی مہم چلائی جا رہی ہے۔ ضلع .. عوام کو اس سے فائدہ اٹھانا چاہیے۔
سمپورنا سمپدا دیوس میں عوامی شکایات کی سماعت کی گئی۔ مکمل حل کے دن 162 شکایات موصول ہوئیں۔ جس میں بنیادی طور پر زمین کے تنازعہ، لیز کی الاٹمنٹ، غیر قانونی قبضے، میٹرنگ، پنشن، رہائش، رہائش، راشن کی تقسیم، بجلی وغیرہ کی شکایات موصول ہوئیں۔
اس موقع پر پولیس سپرنٹنڈنٹ روہن پرمود بوترے، چیف میڈیکل آفیسر ڈاکٹر انیل کمار کے ساتھ ساتھ جنگلات، بجلی، واٹر کارپوریشن، ٹیوب ویل، آبپاشی، سپلائی، سیکنڈری/بنیادی تعلیم، زراعت، سب کلکٹر صدر پنکج سمیت تمام محکموں کے افسران موجود تھے۔ کمار، سی او، تحصیلدار، بلاک ڈیولپمنٹ آفیسر، ای او اور اسٹیشن انچارج موجود تھے۔