دہلی میں عمارت منہدم، سوشل میڈیا پر لوگوں نے کیجریوال حکومت پر جم کر غصہ نکالا

0

نئی دہلی (ایجنسی) : پیر کو ملک کے دارالحکومت دہلی کے سبزی منڈی علاقے میں ایک چار منزلہ عمارت منہدم ہوگئی۔ عمارت کے ملبے تلے کئی افراد اور کئی گاڑیوں کے پھنسے ہونے کا خدشہ ہے۔ واقعے کے بعد راحت اور بچاؤ کا کام جاری ہے۔ فائر ڈیپارٹمنٹ کی گاڑیاں بھی موقع پر موجود ہیں۔ دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے بھی سبزی منڈی علاقے میں اس واقعہ پر دکھ کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ وہ اس واقعہ پر نظر رکھے ہوئے ہیں۔ موصولہ معلومات کے مطابق یہ حادثہ پیر کی صبح 11 بجے کے قریب شمالی دہلی کے سبزی منڈی علاقے میں پیش آیا۔ جیسے ہی قریبی لوگوں نے عمارت گرنے کی آواز سنی ، لوگوں نے قریبی تھانے کو اطلاع دی۔ جس کے بعد پولیس فوری طور پر موقع پر پہنچ گئی۔ ریلیف اور ریسکیو کا کام فائر ڈیپارٹمنٹ کی مدد سے شروع کیا گیا۔ اس دوران لوگوں نے گھر کے ملبے تلے دبے ہوئے ایک نوجوان کو باہر نکالا اور اسے اسپتال میں داخل کرایا۔


اس واقعہ میں ابھی تک کسی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی ہے۔ ملبے میں دو بچوں کے پھنس جانے کی خبریں بھی منظر عام پر آرہی ہیں۔

تاہم ابھی تک اس کی تصدیق نہیں ہو سکی ہے۔ دہلی کے وزیراعلیٰ اروند کیجریوال نے بھی اس واقعہ پر ٹویٹ کرکے دکھ کا اظہار کیا اور کہا کہ سبزی منڈی علاقے میں عمارت گرنے کا حادثہ انتہائی افسوسناک ہے۔ انتظامیہ راحت اور بچاؤ کے کاموں میں مصروف ہے ، ضلعی انتظامیہ کے ذریعے ، میں خود صورتحال کی نگرانی کر رہا ہوں۔


جب عمارت گرنے کی خبر سامنے آئی تو سوشل میڈیا پر لوگوں نے کیجریوال حکومت پر کافی غصہ نکالا۔ ابھے سنگھ نامی ایک ٹوئٹر صارف نے اروند کیجریوال کے ٹویٹ پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے لکھا کہ پانی گھروں میں داخل ہو گیا ہے ، مہاراج ، گھر گر جائے گا۔ آپ کو کیا،آپ ایک عالیشان محل میں خوش ہیں۔ دوسری جانب ٹوئٹر صارف @devsujay18 نے لکھا کہ آپ نے اشتہارات اور اپنے آپ کو دہلی کا مسیحا ثابت کرنے میں جتنی رقم خرچ کی،اگر اسے صحیح جگہ پر استعمال کیا جاتا تو یہ افسوسناک منظرنہ دیکھا جاتا۔

آپ کے تاثرات
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0
+1
0

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here