یوکرین میں تنازع سے افریقہ میں بھاری بحران : اقوام متحدہ

0

ڈاکار، سینیگال: (یو این آئی/شِنہوا) اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انتونیو گوٹیرس نے کہا ہے کہ یوکرین میں جاری تنازعہ نے افریقہ میں خوراک، توانائی اور مالیاتی بحران کو اور بڑھا دیا ہے۔ گٹیرس نے اتوار کی شام سینیگال کے صدر میکی سال کے ساتھ ایک مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے خاص طورسے افریقہ میں بحران کے اثرات کو کم کرنے کے لیے اقوام متحدہ کی ایجنسیوں، ترقیاتی بینکوں اور دیگر بین الاقوامی اداروں کومتحد کرنے کے لیے ایک عالمی ردعمل گروپ قائم کیا ہے۔مسٹر گوٹیرس نے کھلی منڈیوں میں ‘کھانے اور توانائی کا مستقل بہاؤ قائم کرنے اور اشیائے خوردونوش کی قیمتوں کو کنٹرول کرنے کے لیے تمام غیر ضروری برآمدی پابندیوں کو ہٹانے کا مطالبہ کیا۔
انہوں نے کہا کہ یوکرین کی زرعی پیداوار کے ساتھ ساتھ روس اور بیلاروس کی خوراک اور کھاد کی پیداوار کو عالمی منڈیوں میں دوبارہ ضم کیے بغیر غذائی تحفظ کے مسائل کا کوئی حل نہیں ہو گا۔اقوام متحدہ کے سربراہ نے تمام ممالک پر زور دیا کہ وہ قابل تجدید توانائی کے فروغ کو تیز کرنے کی ضرورت والے ممالک کو اسٹریٹجک اسٹاک اور اضافی ذخائر جاری کریں۔ گوٹیرس ہفتے کی شام ڈاکار پہنچے۔ وہ نائجر کا بھی دورہ کریں گے۔