بھیک بھی مانگوپاکستان میں،اجمیر میں پیش آیا مسلم دشمنی کا واقعہ، واقعے کی تفصلات کے لیےخبر حاضر

0
Image: NDTv

نئی دہلی (ایجنسی):اجمیر میں بھیک مانگنے والے ایک مسلم خاندان کے دو افراد کے ساتھ حملہ کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ ملزم نے اسے مارا پیٹا اور کہا کہ پاکستان جاؤ۔ ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد کئی مسلم تنظیموں نے اس واقعے پر اپنے غصے کا اظہار کیا ہے۔ یہ واقعہ رام گنج تھانہ علاقہ کا ہے۔ چوکسی کا مظاہرہ کرتے ہوئے پولیس نے پانچ افراد کو گرفتار بھی کیا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ یہ مسلم خاندان کانپور یوپی کا رہنے والا ہے۔ یہ کنبہ رام گنج تھانہ علاقہ کے سبھاش نگر میں بھیک مانگ رہا تھا ، جہاں پانچ لوگوں نے انہیں ہراساں کیا۔ ان لوگوں کو مارا پیٹا گیا اور پاکستان جانے کے لیے کہا گیا۔ یہ خاندان آڈیو میں ایک گانا چلا کر بھیک مانگ رہا تھا۔
ایس ایچ او ستیندر سنگھ نیگی نے بتایا کہ واقعہ 20 اگست 2021 کا ہے۔ ایک ویڈیو سوشل میڈیا کے ذریعے نوٹس میں آئی، جس میں فقیر پر کچھ لوگوں نے حملہ کیا، چونکہ اس معاملے میں کسی نے ایف آئی آر درج نہیں کی تھی ، تو از خود نوٹس لیتے ہوئے تحقیقات کا حکم دیا۔ تحقیقات کے دوران پتہ چلا کہ للت نامی شخص نے کچھ دوستوں کے ساتھ مل کر اس واردات کو انجام دیا۔ اس شخص کو 20 تاریخ کو ہی گرفتار کیا گیا تھا۔ تفتیش کے بعد دوسرے چار ملزمان کو بھی اگلے دن گرفتار کر لیا گیا۔ ان پانچ افراد کو عدالت میں پیش کیا گیا ہے۔ متاثرخاندان کا سراغ لگانے کی کوشش کی گئی لیکن وہ ابھی تک نہیں مل سکے۔ شاید وہ واپس چلے گئے۔
سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ایک ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ملزمان ایک بھیک مانگنے والے خاندان کو مار رہے ہیں۔ ملزم ویڈیو میں یہ کہتے ہوئے مارتا ہوا نظر آرہا ہے کہ وہ جھاڑو دیتے ہیں اور سونے کی زنجیر چھین لیتے ہیں۔ پاکستان جاؤ ، وہاں بھیک ملے گی ۔ ملزمان ان لوگوں کی جیب سے پیسے نکال کر چیک بھی کر رہے ہیں۔ وہ بار بار کہہ رہے ہیں کہ یہاں مت آنا۔ اس ویڈیو کے حوالے سے سوشل میڈیا پر کافی غصے کا اظہار کیا گیا ہے۔ پولیس نے ملزمان کو گرفتار کر لیا ہے اور ان کے خلاف کارروائی کی جا رہی ہے۔

آپ کے تاثرات
+1
0
+1
0
+1
0
+1
1
+1
0
+1
0
+1
0

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here