ڈیبیو میچ میں سنچری بناکر ارجن نے سچن تندولکر کا کارنامہ دہرایا

0

نئی دہلی(ایجنسیاں)
لیجنڈ کرکٹر سچن تندولکر کے بیٹے ارجن تندولکر بھی اپنے باپ کے نقش قدم پر چل پڑے۔ ارجن نے ڈیبیو میچ میں سنچری بناکر سچن تندولکر کی برابری کرلی ہے۔ اطلاعات کے مطابق سچن تندولکر کے بیٹے ارجن نے بدھ کو اپنے پہلے رنجی میچ میں سنچری بنائی۔ ان کے ساتھی بلے باز سویاش پربھو ڈیسائی نے بھی سنچری بنائی لیکن ارجن کی سنچری خاص بن گئی۔ باپ سچن نے بھی 34 سال پہلے 1988 میں رنجی ڈیبیو کیا تھا۔ پھر وہ سنچری بھی بنا چکے تھے اور مہینہ بھی دسمبر کا تھا۔ بیٹے نے باپ کا کارنامہ دہرایا۔
ارجن نے اپنا رنجی ڈیبیو راجستھان کے خلاف کیا۔ 120 رنز بنائے۔ 16 چوکے اور 2 چھکے لگائے۔ انہوں نے یہ کارنامہ دو بار کے رنجی چمپئن راجستھان کے خلاف دکھایا۔ اس ٹیم میں کملیش ناگرکوٹی اور مہیپال لومرور جیسے اسٹار گیند باز ہیں۔ ناگرکوٹی نے ارجن کا وکٹ بھی لیا۔ ارجن نے سویاش پربھو کے ساتھ چھٹی وکٹ کے لیے 221 رنز کی شراکت داری کی۔
سچن نے اپنا پہلا رنجی میچ 11 دسمبر 1988 کو ممبئی کے لیے گجرات کے خلاف کھیلا۔ تب اس کی عمر 15 سال تھی۔ انہوں نے 100 رنز کی ناقابل شکست اننگز کھیلی۔ اس کے بعد سچن فرسٹ کلاس کرکٹ میں ہندوستان کی جانب سے سنچری بنانے والے سب سے کم عمر ہندوستانی بلے باز بن گئے۔ سچن نے بعد میں دلیپ ٹرافی اور ایرانی ٹرافی میں بھی اپنے پہلے میچ میں سنچری بنائی۔
ارجن تندولکر ایک آل راؤنڈر ہیں۔ وہ تیز گیند بازی کے ساتھ بیٹنگ بھی کرتے ہیں۔ آئی پی ایل میں ممبئی انڈینز کے لیے کھیلتا ہے۔ اسے ابھی تک ڈیبیو کا موقع نہیں ملا۔ اس کے ساتھ ہی وہ اب تک کھیلے گئے 9 ٹی ٹوئنٹی میچوں میں 12 وکٹیں لے چکے ہیں۔ 10 رنز کے عوض 4 وکٹیں ان کی بہترین کارکردگی رہی ہے۔ انہوں نے لسٹ اے کرکٹ میں 7 میچوں میں 8 وکٹیں حاصل کیں۔ لسٹ اے میں ان کی بہترین کارکردگی 32 رنز کے عوض 2 ہے۔